خوش آمدیدویڈیوز

بائبل ہمیں آزمائش کے بارے میں کیا سکھاتی اور خبردار کرتی ہے

شیطان اور اس کے چیلوں نے ہر مومن کے راستے پر نظر رکھی ہوئی ہے۔ وہ مسیح کے ساتھ مطمئن اور وفادار راستے سے مسیحیوں کو دور کرنے کے لئے تمام قسم کے مواقع پیش کرتے ہیں۔ شیطان کے حملوں سے کوئی بھی نہیں بچ سکا اور آج تک کوئی بھی ان کا مقابلہ کرنے میں مکمل طور پر کامیاب نہیں ہوا، لیکن بعض مسیحیوں کو اکثر ایسی آزمائشوں سے گزرنا پڑتا ہے کہ وہ کامیابی کے لئے کوئی امید نہیں دیکھتے۔ وہ بغیر جدوجہد کے ہار مان لیتے ہیں۔

یہ ایک بدقسمتی ہے، لیکن خدا نے مومن کو آزمائش کا سامنا کرنے کے لیے ہی بنایا ہے۔ یہاں ہم مقدس بائبل کی کچھ آیات کو شریک کرنا چاہتے ہیں تاکہ آپ کو اس بات کو سمجھنے میں مدد ملے کہ خدا کا کلام ہمیں کس طرح آزمائش کے بارے میں تعلیم دیتا ہے اور ہمیں خبردار کرتا ہے۔

متّی 26 باب 41 آیت: “جاگو اور دعا کرو تاکہ آزمائش میں نہ پڑو۔ روح تو مُستعد ہے مگر جسم کمزور ہے”۔

مرقس 14 باب 38 آیت: “جاگو اور دعا کرو تاکہ آزمائش میں نہ پڑو۔ روح تو مُستعد ہے مگر جسم کمزور ہے”۔

لُوقا 22 باب 40 آیت: “اور اُس جگہ پہنچ کر اُس نے اُن سے کہا دعا کرو کہ آزمائش میں نہ پڑو”۔

کرنتھیوں(1) 10 باب 13: “تُم کِسی اَیسی آزمائش میں نہِیں پڑے جو اِنسان کی برداشت سے باہِر ہو اور خُدا سَچّا ہے۔ وہ تُم کو تُمہاری طاقت سے زِیادہ آزمائش میں نہ پڑنے دے گا بلکہ آزمائش کے ساتھ نِکلنے کی راہ بھی پَیدا کرے گا تاکہ تُم برداشت کر سکو”۔

گلتیوں 5 باب 17 آیت: “کِیُونکہ جِسم رُوح کے خِلاف خواہِش کرتا ہے اور رُوح جِسم کے خِلاف اور یہ ایک دُوسرے کے مُخالِف ہیں تاکہ جو تُم چاہتے ہو وہ نہ کرو”۔

یعقُوب 1 باب 13 آیت: “جب کوئی آزمایا جائے تو یہ نہ کہے کہ میری آزمائش خُدا کی طرف سے ہوتی ہے کِیُونکہ نہ تو خُدا بدی سے آزمایا جا سکتا ہے اور نہ وہ کِسی کو آزماتا ہے”۔

 


ShareShare on FacebookTweet about this on TwitterShare on Google+Email this to someone
Previous post

اِیسٹر کیا ہے؟

Next post

مشکلات میں شکر گزاری

No Comment

Leave a reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Time limit is exhausted. Please reload CAPTCHA.