آج کا پَیغامخوش آمدیدگراہم فورڈ

بائبل کے مندرجات

بہت سی ثقافتوں اور مذہبوں میں بائبل کو پڑھنا حرام ہے۔ اُن کے حکام یہ نہیں چاہتے کہ اُن کے لوگ یہ جان پائیں کہ بائبل کیا کہتی ہے۔ شاید وہ یہ نہیں جانتے کہ بائبل کیا کہتی ہے۔ تو میں نے سوچا کہ میں اِس پر آپ کو مکمل معلومات فراہم کروں جس میں میں آپ کے لئے اُن کے موضوع پر معلومات پیش کروں۔

بَائبل اِنسان اور خُدا، خُدا اور یہودیوں، خُدا اور داؤد کے گھرانے، اور آخر میں خُدا اور یسوع مسیح پر ایمان رکھنے والوں کے درمیان وعدوں کی کتاب ہے۔

1۔ توریت: بَائبل یہودیوں کے قانون کی پانچ کتابوں سے شروع ہوتی ہے، یا جسے عبرانی میں توریت کہتے ہیں جو کلام کی تعلیم دیتی ہے۔ پیدائش کی کتاب سے شروع کریں گے کہ یہ کتاب خُدا کی اُن تخلیقوں کا خلاصہ کرتی ہے جن کو خُدا نے اِس کائنات اور زمین پر بنایا ہے۔ آج کے دور میں، یہ پیغام اپنی درستگی کی وجہ سے کائنات کے حوالے سے سائنسی انکشاف کے ساتھ ملا کر بیان کیا جاتا ہے۔ یہ تخلیق کو چھے دنوں میں تقسیم کرتا ہے۔ دو سے چھے دنوں کی تخلیق میں ہر دن پچھلے دن کے آدھے گزرنے کے بعد شروع ہوتا ہے اور اُن دنوں کا وقت سائنسی وقت کے ساتھ ملتا ہے۔ پھر توریت ہمیں یہ بھی بتاتی ہے کہ اِنسان کون ہیں اور ہماری اخلاقیات کیا ہے اور کہ ہمیں روحانی طور پر مشکلات کا سامنا کرنا پڑھتا ہے، اور پھر ہمیں اِسرائیلیوں کے پوروجوں کے ساتھ خُداؤں کی مداخلت کے بارے میں بتاتی ہے، اُس کے بعد مصر میں اُن کی غلامی کے بارے میں بتاتی ہے اور کیسے خُدا نے اُن کو بچایا، کہ جس نے موسیٰ کو اُن کی رہنمائی کے لئے کہا اور اُنہیں تعلیم دی، جس میں خُدا کا قانون اور اسرائیلیوں کا قانون دونوں شامل تھے کہ وہ خُدا کی عبادت اور اُس کو شناخت کریں۔

2۔ تاریخ: پھر بائبل اِسرائیلیوں کی کہانی بیان کرتی ہے، کہ کیسے اُنہوں نے زمین فتح کی، کہ ججوں نے اُن کی بغاوت سے پہلے اُن پر حکومت کی اور کہ وہ ایک بادشاہ چاہتے تھے۔ اُن کے دوسرے بادشاہ، داؤد نے اسرائیل کو ایک بادشاہت اور قوم کے طور پر قائم کیا۔ بَائبل اُن کے خُدا سے پیچھے ہٹنے اور اُن کے زوال کو بیان کرتی ہے، ستر سال یا اُس کے بعد اُن کے آنےسے پہلے تاکہ وہ اپنی وعدہ کردہ زمین دوبارہ حاصل کریں، آخر میں بابیلینوں نے اُنہیں جلاوطنی سے لے لیا۔

3۔ نبیوں کے بارے میں: اُس وقت کے دوران خُدا نے یہودیوں کے پاس بہت سے نبی بھیجے، تاکہ اُنہیں خُدا کی طرف بلایا جائے، تاکہ اُن کو یہ بتایا جائے کہ جو کچھ وہ کر رہے ہیں غلط ہے اور تاکہ اُن سے وعدہ کیا جائے کہ خُدا کیا کریگا، جس میں مسیح کو بھی بھیجا تھا، جس کی پیشن گوئی موسیٰ نے کی تھی۔ یہ سب اِس لئے ہوا تاکہ تمام قوموں، اور اسرائیلیوں کو ہدایت دی جائے اور اُن کے طریقہ کار نے ایک مثال قائم کی اور تمام قوموں کو نصیحت دی۔

4۔ زبور اور حکمت: زبور کی کتاب میں 150 عبادت کے گیت ہیں، اُن میں سے بہت سے گیت نبوت پر ہیں، اُن میں سے بہت سے اِنسانوں کے دلوں کے درد کو بیان کرتے ہیں۔ اِمثال کی کتاب عقل مندی کے خلاصوں پر مشتمل ہے کہ ایک شخص کو کیسے عقل مندی اِختیا کرنی چاہیے۔ واعظ کی کتاب وہ کتاب ہے جو لکھی گئی تاکہ اُس شخص کی حالت کے بارے میں وضاحت کی جائے جو خُدا کو نہیں جانتا ہے۔ غزل ُالغزلات ایک محبت کی کہانی کے بارے میں ڈرامہ ہے، جو محبت کی فطرت ظاہر کرتا ہے، جس میں خُدا سے محبت بھی شامل ہے۔ ایّوب کی کتاب ایک ایسے شخص کے بارے میں افسانہ ہے جو ناحق ظلم برداشت کرتا ہے اور وہ خُدا کو اِن تمام مشکلات کے لئے ذمہ دار سمجھتا ہے۔ یہ کتابیں عبرانی کلام کو ظاہر کرتی ہیں، جسے ہم پرانا عہد نامہ بھی کہتے ہیں۔

5۔ نیا عہد نامہ: یہ یسوع کے چار سوانح حیات پر مشتمل ہے۔ جو چار انجیلوں کے طور پر جانا جاتا ہے۔ اعمال کی کتاب رسولوں اور قدیم گرجاگھروں کی تاریخ کو بیان کرتی ہے اور یہ کہ روح القدس کیسے مسیحیوں کو با اختیار بناتا ہے کہ وہ خُدا کی خدمت کریں۔ اُس کے بعد رسولوں کے کئی خط آتے ہیں جو محفوظ کیے گئے ہیں، جس میں سینٹ پال کے بہت سے خط شامل ہوتے ہیں۔ آخرکار، الہام کی کتاب پیشن گوئی کی کتاب ہے، جو یوحنا نے لکھی، جو ایک رسول تھا، جو مستقبل کی پیشن گائی کرتا ہے اور جس نے گرجاگھر کو بتایا کہ ہمیں مسیح کے دوبارہ آنے سے پہلے کیا کرنا ہے۔ اِس کا اختتام خُدا اور اُس کے مسیح کے اخلاقیات کے عہد کی تفصیل کے ساتھ ہوتا ہے۔

تو بَائبل ہر چیز کے آغاز پر شروع ہوتی ہے اور جس کا اختتام خُدا کے ساتھ اخلاقیات کے عہد پر ہوتا ہے، اور یہ اُس کے قردار کو ظاہر کرتی ہے کہ خُدا لوگوں کو اپنا بنانے کے لئے کام کرتا ہے۔

یہ بہت باغیانہ پیغام ہے، اگر آپ اِسے ایسا کہہ سکتے ہیں، جو یہ ہے کہ اِس دُنیا میں سب سے بڑا اختیار قومی حکومت کو نہیں ہے، لیکن خُدا کو ہے۔ مسیح جو کہ بادشاہوں کا بادشاہ ہے اور خُداوندوں کا خُداوند ہے، جس کے سامنے ایک دن ہم جھکیں گے اور خُداوند کے طور پر قبول کریں گے۔ لہذا، قومی حکمت اور اُن کے ساتھ تمام مردوں اور عورتوں اور تمام اِنسانی اداروں، جس میں تمام مذہبی لوگوں کو خُدا کے کلام کو ماننا چاہیے تاکہ وہ یہ جان سکیں کہ کیا سچ میں اچھا ہے اور کیا بُرا ہے۔ اگر آپ یہ چاہتے ہیں کے ظلم ختم ہو جائے اور آفتیں ختم ہو جائیں تو آپ یہ سب کریں۔

بَائبل تمام سچائیوں کا ذریعہ ہے۔ اِس کی گنجائش مخصوص اور محدود ہے، لیکن یہ تمام سچائیوں کو ڈھونڈنے کی ہدایت ہے: خُدا کا روح القدس تمام سچائیوں میں ہماری رہنمائی کرے گا اور کہ ہمارا کردار ہر چیز کو جانچنا ہے، اُس پر عمل کرنا ہے جو سچ ہے، اور آخر میں، حکمت حاصل کریں، علم حاصل کریں اور ہر چیز کو سمجھیں۔

تو بَائبل پر پابندی لگانے والوں کے لئے میری یہ نصیحت ہے کہ: آپ اپنی ہی نجات کو کھو رہے ہیں۔

جن کے پاس باَئبل ہے میں اُن کو یہ نصیحت دونگا کہ: اِسے پڑھیں، سمجھیں اور اندرونی طور پر اِسے ہضم کر لیں اور اِس کے سچ اور اخلاقیات کو تلاش کریں اور اُس خُدا کو تلاش کریں جس نے اِسے بھیجا۔ خُدا آپ سب کو برکت دے۔


ShareShare on FacebookTweet about this on TwitterShare on Google+Email this to someone
Previous post

خاص سوالوں کے جواب

Next post

حقیقی خوشخبری

No Comment

Leave a reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Time limit is exhausted. Please reload CAPTCHA.